آسٹریلیا کی ہم جنس پرست وزیرخارجہ کی اپنی خاتون دوست سے شادی


ایڈیلیڈ: آسٹریلیا کی خاتون وزیرخارجہ پینی وونگ نے اپنی خاتون دوست صوفی آلواشے کے ساتھ دو دہائیوں سے جاری دوستی شادی کے بندھن میں بدل دی۔

دی گارجین کی رپورٹ کے مطابق ہم جنس پرست جوڑے کی شادی کی تقریب ہفتے کو ایڈیلیڈ میں منعقد ہوئی جہاں وزیراعظم انتھونی البانیز اور دیگر سینئر وزرا بھی شریک تھے۔

شادی تقریب میں جوڑے کی دو بیٹیوں 11 سالہ الیگزینڈرا اور 8 سالہ ہنہ بھی شریک تھے اور مہمانوں کا استقبال کر رہی تھیں۔
آسٹریلیا کی وزیرخارجہ پینی وونگ نے کہا کہ ہم بہت خوش ہیں اور ہمارے خاندان کے افراد اور دوست بھی اس خاص دن کے موقع پر ہماری اس خوشی میں شریک ہیں۔

پارلیمنٹ کی رکن مشیل رولینڈ نے جوڑے کو مبارک باد دی اور کہا کہ آپ دونوں بہت خوب صورت لگ رہی ہیں۔

خیال رہے کہ پینی وونگ 2002 میں آسٹریلیا کی پارلیمنٹ کی رکن منتخب ہوئی تھیں اور وہ آسٹریلیا کی رکن پارلیمنٹ بننے والی پہلی ایشیائی نژاد خاتون بن گئی تھیں اور حال ہی میں انہوں نے آسٹریلیا کی تاریخ میں طویل عرصے تک کابینہ کا حصہ بننے کا ریکارڈ قائم کیا ہے۔

پینی وونگ ابتدائی طور پر ہم جنس پرستوں کی شادی کے حوالے سے اپنی جماعت لیبر پارٹی کے مؤقف کے ساتھ تھیں لیکن بعد میں وہ اس کے برعکس ہم جنس شادیوں کے حق میں سب سے توانا آواز بن گئیں۔

آسٹریلیا کی پارلیمنٹ میں 2017 میں اس حوالے سے ہونے والی بحث میں انہوں نے اپنی پارٹر صوبی اور ان کی بیٹیوں کو خراج تحسین پیش کیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں